top-u-28-03-2024-2
اہم قومی خبریں

اسلام آباد ( فداء اللہ مروت سے ) وزیر خارجہ اسحاق ڈار نے اسلام آباد کی سفارتی برادری کے اعزاز میں افطار ڈنر کا اہتمام کیا، تقریب کے مہمان خصوصی وزیراعظم شہبازشریف تھے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق اسحاق ڈار نے افطار ڈنر سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تقریب کا مقصد بین المذاہب ہم آہنگی کو فروغ دینا اور رواداری کے پیغام کو آگے بڑھانا ہے، وزیراعظم پاکستان کو وزارت خارجہ میں افطار ڈنر میں خوش آمدید کہنا باعث اعزاز ہے۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ افطار ڈنر میں سفارتی برادری کی شرکت پر شکر گزار ہوں، دنیا بھر کے مسلمانوں کیلئے رمضان المبارک کے مقدس مہینہ کی خاص مذہبی اور سماجی اہمیت ہے، ہم آہنگی اور مشترکہ سوچ کیلئے بات چیت اور تعاون اہم ہے، پاکستان کی خارجہ پالیسی امن، مساوات اور انصاف کے اصولوں پر مبنی ہے۔

وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ پاکستان کثیرالجہتی، امن، ترقی اور باہمی خوشحالی کا علمبردار رہے گا، پاکستان 2025ء اور2026ء کیلئے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی غیر مستقل نشست کیلئے امیدوار ہے، ایشیا پیسفک گروپ کے ملکوں نے اس سلسلے میں پاکستان کی حمایت کی ہے، پاکستان کی حمایت پر ہم ان ممالک کے بے حد مشکور ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان بین الاقوامی امن اور سلامتی کو برقرار رکھنے کیلئے کونسل کے مینڈیٹ کو فروغ دے گا، رمضان المبارک کے مہینے میں ہمیں غزہ کے مسلمانوں کو نہیں بھولنا چاہئے، غزہ کے مسلمانوں کو گزشتہ چھ ماہ سے بھوک اور جنگ کا سامنا ہے، غزہ میں فوری اور غیر مشروط جنگ بندی کا وقت آ گیا ہے، جنگ بندی کا مطالبہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے کیا ہے۔

اسحاق ڈار نے مزید کہا کہ علاقائی تنازعات کے حل کے بغیر امن اور خوشحالی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا، سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر فلسطین اور کشمیر سمیت دیرینہ تنازعات کو حل کیا جائے، ماسکو میں اور بشام میں ہونے والے حملے یاد دلاتے ہیں کہ دہشت گردی پوری دنیا کیلئے خطرہ ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان اس خطرے سے نمٹنے کیلئے علاقائی اور عالمی شراکت داری کو فروغ دیتا رہے گا، امن کی جیت تک دہشت گردی کے خلاف ہماری جنگ ختم نہیں ہوگی، ہمارے پاس اقوام کے درمیان مکالمے اور افہام و تفہیم کو فروغ دینے کا ایک منفرد موقع ہے۔

اسحاق ڈارنے کہا کہ پاکستان پوری دنیا کے امن کیلئے عالمی شراکت داری کو فروغ دینے کیلئے تیار ہے۔



Share: